Urdu Khabrain
Urdu Khabrain is the world most populated Urdu News website. You can find and read daily Urdu news.

بلوچستان لبریشن فرنٹ کا انتخابات 2018 کے بائیکاٹ کا اعلان

0 47

 

اللہ نذر بلوچ بلوچستان میں علیحدگی پسند تحریک کے سب سے متحرک دھڑے بلوچستان لبریشن فرنٹ کے سربراہ ہیں

پاکستان کے شورش زدہ صوبے بلوچستان میں سب سے متحرک عسکریت پسند گروپ بلوچستان لبریشن فرنٹ نے 2018 کے انتخابات کا بائیکاٹ کرنے کا اعلان کیا ہے۔

تنظیم کے سربراہ ڈاکٹر اللہ نذر نے ایک ویڈیو پیغام میں لوگوں سے اپیل کی ہے کہ وہ انتخابات کا حصہ نہ بنیں تاکہ ٹرن آؤٹ کم سے کم رہے۔

یاد رہے کہ بلوچستان لبریشن فرنٹ سمیت تمام ہی علیحدگی پسند تنظیموں نے 2013 کے انتخابات کا بھی بائیکاٹ کیا تھا، جس کی وجہ سے بلوچ علاقوں میں ووٹ ڈالنے کی شرح انتہائی کم رہی تھی۔

اس کے نتیجے میں حال میں اپنی مدت پوری کرنے والے وزیر اعلیٰ بلوچستان میر عبدالقدوس بزنجو سمیت کئی امیدوار چند سو ووٹ لے کر ہی کامیاب ہوئے تھے۔

نامہ نگار ریاض سہیل کے مطابق ڈاکٹر اللہ نذر بلوچ نے اپنے ویڈیو پیغام میں کہا ہے کہ 2013 میں بلوچ قوم نے ایک ریفرنڈم کیا اور جس کے بعد ٹھپے لگائے گئے اور وزیراعلیٰ بنایا گیا۔ آئندہ بھی اسی طرح کسی کو منتخب کیا جائے گا۔

اپنے پیغام میں انھوں نے کہا کہ ’کچھ لوگ یہ تاثر دینے کی کوشش کر رہے ہیں کہ بلوچ قومی تحریک کمزور ہو کر پسپائی کی جانب بڑھ رہی ہے جبکہ درحقیقت بلوچ تاریخ میں یہ دو دہائی یعنی بیس سالوں پر مشتمل بلوچ آزادی کی تحریک آگے جا رہی ہے اور دن بدن بلوچ قوم اس میں شامل ہو رہی ہے۔ بلوچ نسل کشی ہو رہی ہے، لیکن بلوچ قوم پیچھے نہیں ہٹ رہی ہے، سوائے سرداروں کے۔ وہ سودے بازی کے لیے کبھی آگے تو کبھی پیچھے مڑتے ہیں تاہم عام بلوچ قومی جدو جہد کے لیے کمر بستہ ہے اور ایک قدم بھی پیچھے نہیں ہٹا۔‘

میر عبدالقدوس بزنجو کو گذشتہ عام انتخابات میں صرف پانچ سو ووٹ ملے تھے

ڈاکٹر اللہ نذر نے بلوچستان کے سابق وزیرِداخلہ سرفراز بگٹی اور نیشنل پارٹی کے سربراہ حاصل بزنجو پر بھی سخت تنقید کی ہے اور کہا ہے کہ وہ بلوچ قوم کو یہ ہی کہہ رہے ہیں کہ ہمیں بیرونی ممالک سپورٹ کر رہے ہیں، لیکن اگر بیرونی ممالک ہماری فنڈنگ کرتے، ساز و سامان دیتے تو آج جنگ کی شکل یہ نہیں ہوتی، یہ بلوچوں کی اپنی ذاتی جنگ ہے۔

ڈاکٹر اللہ نذر حکومت چین سے کہا ہے کہ وہ بلوچستان میں سرمایہ کاری نہ کرے وہ خود ایک انقلابی عہد سے گزر چکے ہیں۔” بلوچ ایک زندہ قوم ہے، اس کی اپنی زبان اور زمین ہے۔ بلوچ قوم میں قومی وجود کی تمام روایات اور قانون موجود ہیں،ایسی قوم کو کوئی شکست نہیں دے سکتا۔ آپ (چین) ایک غلط راستے کا انتخاب کر چکے ہیں۔

قالب وردپرس

Loading...

Get real time updates directly on you device, subscribe now.

Loading...