Urdu Khabrain
Urdu Khabrain is the world most populated Urdu News website. You can find and read daily Urdu news.

غیرملکی وزرائے خارجہ کے دورے غماز ہیں ’’پاکستان تنہا نہیں‘‘ لیفٹیننٹ جنرل نعیم لودھی

0
اسلام آباد (حنیف خالد) پاکستان فوج کے ریٹائرڈ جنرل اور نگران دور کے وفاقی وزیر دفاع لیفٹیننٹ جنرل (ر) نعیم خالد لودھی نے کہا ہے کہ پاکستان میں غیر ملکی شخصیات (بشمول امریکہ ایران چین جاپان سعودی عرب) کے حالیہ دورے اس بات کے غماز ہیں کہ پاکستان دنیا میں تنہا قطعاً نہیں۔ بلکہ دنیا کی جتنی بڑی طاقتیں ہیں وہ پاکستان کے ساتھ اپنے تعلقات کو پہلے سے زیادہ مضبوط کرنے میں گہری دلچسپی رکھتی ہیں وہ حکومت پاکستان کی حکمت عملی کی سمت کا اندازہ لگانا چاہتے ہیں۔ ابتدائی دنوں میں آنے والے غیر ملکی وفود اس بات کا بھی عندیہ دیتے ہیں کہ کن ملکوں کے ساتھ پاکستان کے روابط زیادہ اہم ہیں۔ عنقریب ترکی اور افغانستان کے ساتھ اعلیٰ شخصیات کے باہمی دورے متوقع ہیں۔ ان غیر ملکی شخصیات کے پاکستان کے یکے بعد دیگرے دورے اپنی جگہ مگر دنیا جانتی ہے کہ اصل تعلقات کی بنیاد ہر ملک کے اپنے اپنے قومی مفادات ہوتے ہیں۔ جنرل نعیم خالد لودھی اتوار کو اپنی رہائش گاہ پر جنگ گروپ کیلئے خصوصی انٹرویو دے رہے تھے۔ اس موقعہ پر لیفٹیننٹ جنرل (ر) نعیم خالد لودھی کے ساتھ ان کے بھائی ایئر وائس مارشل فہیم ارشد لودھی، بریگیڈیئر منیر اکمل لودھی، ونگ کمانڈر (ر) خورشید بھی موجود تھے۔ نگران حکومت کے وزیر دفاع لیفٹیننٹ جنرل (ر) نعیم خالد لودھی نے ایک سوال کےجواب میں کہا کہ پاکستان کے تمام عوام اور ادارے بشمول مسلح افواج ہمسایہ ملک ہندوستان کے ساتھ پرامن بقائے باہمی کی بنیاد پر اچھے تعلقات قائم کرنا چاہتے ہیں۔ ہمسایوںکے ساتھ پاکستانی قوم مسلمہ اچھے تعلقات کی ہمیشہ سے خواہاں ہے ہندوستان کے ساتھ اچھے تعلقات کی راہ میں جو بات حائل ہے وہ تنازعہ کشمیر ہے جو 70 سالوں سے اقوام متحدہ کے نامکمل ایجنڈے کا حصہ چلا آرہا ہے یو این کے موجودہ اور سابقہ ہر سیکرٹری جنرل نے تنازعہ حل کرنے کی ضرورت پر زور دیا۔ پاکستان کے وزیراعظم کہتے رہے ہیں اور کہہ رہے ہیں کہ ہندوستان اگر ایک قدم بڑھائے ہم دو قدم بڑھائیں گے پاکستان نے سکھ یاتریوں کیلئے کرتار پور بارڈر کھولنے کا اعلان کرکے اپنی طرف سے ہندوستان کی جانب خیرسگالی کا اہم قدم بڑھایا ہے تاحال ہندوستان نے پاکستان کے خیرسگالی کے کسی بھی اقدام کا مثبت جواب نہیں دیا۔ اس کے برعکس ہندوستان ہمیشہ مشرقی و مغربی (افغانستان کی جانب سے) سرحدوں سے پاکستان کے خلاف کسی نہ کسی شکل میں جارحیت کرتا چلا آرہا ہے۔ پاکستان کے اندر بھی خلفشار پیدا کرنے کا کوئی موقعہ ہندوستان نے ہاتھ سے جانے نہیں دیا۔ انڈین بحریہ کے مسلمہ افسر کلبھوشن اور اس کے نیٹ ورک کا پکڑے جانے پاکستان کے اندرونی معاملات میں مداخلت کا واضح ثبوت ہے ساری دنیا، ہندستان کے پاکستان کے ساتھ معاندانہ رویے کو دیکھ رہی ہے مقبوضہ جموں و کشمیر میں ہندستان کی فوج نے ظلم و ستم کا جو بازار گرم کررکھا ہے اس پر دنیا کا ردعمل بھی سامنے آیا ہے انہوں نے کہا کہ پاک بھارت ڈائیلاگ شروع کئے جانے میں سب سے بڑی رکاوٹ متنازعہ کشمیر اور کشمیریوں پر ہندستانی فوج کے وحشیانہ مظالم ہیں۔ انہوں نے کہا کہ امریکی وزیر خارجہ نے پاکستان کے چند گھنٹے کے دورے کے بعد ہندوستان جاکر جو بیان دیا ہے وہ ہندوستان امریکی گٹھ جوڑ کا منہ بولتا ثبوت ہے۔ لیفٹیننٹ جنرل(ر) نعیم خالد لودھی نے کہا کہ امریکہ پاکستان کے اس بیانیے کو ماننے پر مجبور ہو گیا ہے کہ افغانستان کا مسئلہ حل کرنے کے لیے جنگ نہیں بلکہ مذاکراتی میز پر بیٹھنا ہے جس میں تمام سٹیک ہولڈرز(متعلقہ فریقوں) کی موجودگی ضروری ہے طالبان کا یہ مطالبہ بھی آج امریکہ ماننے پر مجبور ہو گیا ہے کہ وہ امریکہ سے بلاواسطہ (براہ راست) بات چیت کریں گے۔ انہوں نے کہا کہ ہندستان کا افغانستان میں کردار بلاجواز ہے پاکستان کو اس بات پر اعتراض نہیں کہ افغانستان میں ہندوستان کیوں موجود ہے پاکستان کو افغانستان میں ہندوستان کی موجودگی پر کوئی بڑا اعتراض نہیں ہے بلکہ اعتراض اس بات پر ہے کہ ہندوستان افغانستان کی سرزمین پاکستان دشمن سرگرمیوں کے لیے متواتر استعمال کررہاہے۔ سابق وزیردفاع نے کہا کہ چائنا پاکستان اکنامک کوریڈور (چین پاکستان اقتصادی راہدار) کے سلسلے میں امریکی و ہندوستانی اعتراضات کو ہم مسترد کرتے ہیں اور پاکستان کی اپنے ہمسایہ ملک ایران کے ساتھ تعلقات بڑھانے کی کاوشیں کسی تیسرے ملک کے خلاف نہیں ہیں۔ سی پیک پاکستان کی معیشت اور پاک چائنا دوستی کو آگے بڑھانے کے لیے اتنا اہم ہے کہ اس پر پاکستان کوئی سودے بازی اور سمجھوتے کرنے کا سوچ بھی نہیں سکتا پوری پاکستان قوم و افواج سی پیک کے بارے میں متحد اور یک زبان ہیں ایک(PAGE)پر ہیں لیفٹیننٹ جنرل(ر) نعیم خالدلودھی نے کہا کہ اللہ کے فضل و کرم اور عوام و فوج کی قربانیوں سے پاکستان دنیا کا وہ واحد ملک ہے جس نے اپنی سرزمین پر دہشت گردی کی عفریت کا سر کچلا۔ جو تھوڑی بہت دہشت گردی ہورہی ہے اس کا منبع افغانستان میں امن کا نہ ہونا ہے دہشت گردی کے خلاف جنگ میں پاکستان فرنٹ لائین سٹیٹ بنا اور اس جنگ میں پاکستانی فوج سکیورٹی کے دیگر اداروں اور عوام نے لازوال ہے مثال جانی اور مالی قربانیاں دیں پاکستان کے 70ہزار سے زائد سویلین اور فوجی دہشت گردی کے خلاف جنگ میں شہید ہوئے جب کہ مزید ہزاروں زخمی ہوئے سینکڑوں ارب ڈالر کا ملکی معیشت قوم کو نقصان برداشت کرنا پڑا امریکہ سمیت نیٹو کے تمام ممالک کی فوجوں کا مجموعی طور پر جو جالی نقصان ہوا وہ پاکستان کے مقابلے میں عشر عشیر نہیں ہے پوری دنیا اس بات کی معترف ہے کہ پاکستان کی کاوشوں کے بغیر اس خطے میں دہشت گردی پر قابو پانا ناممکن تھا۔ انہوں نے کہا کہ افغانستان میں امریکہ کا پہنچا، رہنا اور وہاں سے نکلنا بھی پاکستان کی عملی معاونت کے بغیر ممکن نہیں ہے۔ اس کے باوجود امریکہ کا پاکستان کی جانب رویہ حیرت انگیز اور ناقابل فہم ہے لیفٹیننٹ جنرل(ر) نعیم خالد لودھی نے کہا کہ جس طریقے سے افواج پاکستان نے ماضی اور حال میں اپنی پیشہ وارانہ صلاحیتوں کا لوہا منوایا ہے انشا اللہ آنے والے وقتوں میں بھی پاکستان افواج پاکستان کی سالمیت قومی یکجہتی کے تحفظ کے لئے کلیدی کردار ادا کرتی رہیں گی۔ انہوں نے کہا کہ اللہ کے فضل و کرم سے پاکستان کے ایٹمی سائنسدانوں ایٹمی انجینئروں اور ٹیکنیشنوں کے پیشہ وارانہ صلاحیتوں اور پاکستانی قوم کے عزم نے ملکی دفاع کو ناقابل تسخیر بنایا ہے اس کے پیش نظر یہ بات یقینی ہے کہی جاسکتی ہے کہ پاکستانی قوم کا مستقبل درخشندہ تابناک ہے۔

Loading...

Get real time updates directly on you device, subscribe now.

تبصرے