Loading...

بیٹسمینوں کے کھیل میں عدم تسلسل پر شعیب ملک فکر مند

0

لاہور:  شعیب ملک نوجوان بیٹسمینوں کی کارکردگی میں عدم تسلسل پر فکر مند ہیں۔

سنچورین میں تیسرے ٹی ٹوئنٹی میچ کے بعد میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے شعیب ملک نے کہا کہ جیت ہمیشہ اطمینان کا باعث ہوتی ہے، نوجوان کرکٹرز نے دورئہ جنوبی افریقہ میں بہت کچھ سیکھا،کئی اہم مواقع پر ہمت ہار جانے سے ناکامیاں ہوئیں،اس ضمن میں بہتری لانے کی ضرورت ہے۔

سابق کپتان نے کہا کہ ہم ٹی ٹوئنٹی سیریز میں ابتدائی دونوں میچز بھی جیت سکتے تھے،بہرحال کرکٹ میں ایسا ہوجاتا ہے،یہ سیکھنے کی ضرورت ہے کہ مستقبل میں اس طرح کی صورتحال آئے تو کس طرح مقابلہ کرنا چاہیے۔

شعیب ملک نے کہا کہ بابر اعظم اور امام الحق نے متاثر کیا لیکن غیرایشیائی کنڈیشنز میں فتوحات کیلیے دیگر کو بھی ثابت قدمی کا مظاہرہ کرتے ہوئی اسی طرح کی کارکردگی دکھانا ہوگی۔ پاکستان کرکٹ کو بلندی کی طرف لے جانا ہے تو ہمیں اس معیار کے مزید بیٹسمینوں کی ضرورت ہوگی۔

انھوں نے کہا کہ پی سی بی نوجوان کرکٹرز کو تسلسل کے ساتھ مواقع دے رہا ہے، بابر اعظم اپنے کھیل میں نکھار لائے،امام الحق نے بھی ایسا ہی کیا،امید ہے کہ دیگر نئے کھلاڑی بھی ان سے سبق سیکھیں گے۔

شعیب ملک نے کہا کہ شاہین شاہ آفریدی پاکستان کیلیے اچھی دریافت ہیں، پیسر کے پاس ٹیلنٹ موجود اور وہ اپنی صلاحیتوں کو مسلسل نکھارتے جا رہے ہیں،میں نے ان کو نیٹ میں بولنگ کرتے دیکھا،وہ اپنی بولنگ میں ورائٹی لانے کیلیے سیکھنے کی کوشش میں ہوتے ہیں،اس بات کا کھوج لگانے کی میں بھی کوشش کررہا ہوں کہ پاکستان کو ایک کے بعد ایک فاسٹ بولر کس طرح مل جاتا ہے۔

شاید آپ یہ بھی پسند کریں
Loading...
تبصرے
Loading...