Loading...

اگر آپ تنہائی پسند ہیں تو یہ ضرور پڑھیں

0

کچھ لوگوں کو تنہائی بہت پسند ہوتی ہے، اسی لیے وہ زیادہ سوشل نہیں ہوتے، ایسے افراد کو اکیلے کو ترجیح دیتے ہیں۔ اگر کبھی کسی محفل یا تقریب میں ان افراد کا جانا ہوتا ہے تو وہاں بھی یہ لوگ خاموش ہی رہتے ہیں۔لیکن ماہرین نے تنہائی پسند افراد کو خبردار کردیا ہے کہ تنہائی صحت کے لیے بالکل بھی اچھی نہیں ہے۔

جو افراد اتنہائی میں زیادہ وقت گزارتے ہیں ،ان کو دل کے دورہ پڑنے کا خطرہ ہوسکتا ہے۔ماہرین کا کہنا ہے کہ جو لوگ اکیلے رہنے کو ترجیح دیتے ہیں ان میں دل کا دورہ اور انجائنہ کا دورہ پڑنے کاخطرہ 29 فیصد بڑھ جاتا ہےاور 32 فیصد برین اسٹروک ہونے کا خطرہ بڑھ جاتا ہے۔اس یہ بات بات ظاہر ہوتی ہے کہ

تنہا رہنا انسانی صحت کے لیے انتہائی خطرناک ہے، چونکہ تنہائی میں انسان کو عجیب خیالات آتے ہیں جس کے باعث دماغ بہت پریشان ہوجاتا ہے ۔ پریشانی کے باعث انسان اپنی زندگی ہونے والی ناکامیاں ان کے دماغ میں سوار ہوجاتی ہے۔ جس کے باعث اکثر اوقات لوگ خودکشی جیسا انتہائی قدم بھی اٹھالیتے ہیں۔ماہرین کا کہنا ہے کہ

تنہائی میں وقت گزارنے کے باعث کئی افراد اپنی جان سے بھی ہاتھ دھو بیٹھتے ہیں، تنہائی آپ کو سخت قسم کے ڈپریشن میں مبتلا کردیتا ہے اور ڈپریشن انتہائی خطرناک بیماری تصور کی جاتی ہے۔دیکھنے میں آیا ہے کہ اکثر نوجوان نسل ڈپریشن کا زیادہ شکار ہوتی ہے، جس کی بڑی وجہ والدین کی ان پر توجہ نہ دینا ہے۔ ماہرین نے خبردار کیا ہے کہ زیادہ دیر اکیلے رہنا آپ کے لیے خطرناک ثابت ہوسکتا ہے، لہذا اپنا وقت دوستوں اور گھروالوں کے ساتھ زیادہ سے زیادہ گزارنا چاہیئے، اگر آپ کے گھر میں یا کوئی دوست تنہا رہنا پسند کرتے ہیں تو ان کو ہرگز تنہا نہیں رہنے دیں، ان کے ساتھ وقت گزاریں، ان دوستوں کو بھرپور وقت گزاریں اور ان کی پریشانیوں کو سنیں تاکہ وہ اپنی باتیں باآسانی آپ سے شیئر کریں۔

شاید آپ یہ بھی پسند کریں
Loading...
تبصرے
Loading...