Loading...

وقار یونس کی بلا اجازت ‘اِن سوئنگر’ پر عمران خان کا ردعمل

0

یوں تو آپ نے عمران خان کی جارح مزاج کپتانی اور غصے کے کئی قصے کے سنے ہوں گے مگر آج ہم آپ کو جس واقعے کے بارے میں بتانے جارہے ہیں اسے جان کر آپ کو عمران خان کی پاور اور دوسروں کی حِرس کا اندازہ ہوجائے گا۔ایک مرتبہ بلے باز نے وقار یونس کی گیند کو مِڈ آن کی جانب ڈرائیو کیا، گیند عمران خان کو کراس کرکے انتہائی سست رفتاری سے باؤنڈری کی جانب جاتی رہی مگر

انہوں نے اسے روکنے کی کوشش نہ کی۔ اور بالآخر گیند لڑھکتے ہوئے باؤنڈری لائن کو عبور کرگئی۔عمران خان نے گیند کو اٹھایا اور سیدھا دوڑتے ہوئے وقار یونس کے پاس آئے، انہوں نے وقار سے پوچھا ‘وکی یہ تم نے کیا کیا’؟ وقار ہونس نے جواب

دیا کپتان میں نے اسے ‘اِن سوئنگر’ کرنے کی کوشش کی۔ یہ جواب سن کر عمران خان نے بیزاری کے انداز میں اپنے ہاتھوں کو ہوا میں بلند کیا اور چلّاتے ہوئے کہا ‘یار’ تمہیں کوئی بھی ایسی چیز کرنی ہو تو اس سے قبل مجھ سے ضرور پوچھو۔جس کے بعد وقار یونس اپنے بولنگ مارک پر کھڑے ہوگئے کچھ وقت گزرا تو عمران خان نے چلّاتے ہوئے پوچھا ‘کیا ہوا بولنگ کیوں نہیں کررہے’؟ وقار نے جواب دیا ‘

آپ نے مجھے نہیں بتایا کہ کونسی گیند کرنی ہے’۔وکٹ پر موجود سچن ٹنڈولکر اور سجے مانجریکر یہ دیکھ کر بہت متاثر ہوئے، تاہم عمران خان کی جانب سے ہدایات لینے کے بعد وقار نے جنوبی افریقی پلان پر بولنگ شروع کردی، ان کی ہر گیند آف اسٹمپ سے ذرا سی باہر اس طرح پچ ہورہی تھی جیسے مشین سے گیند کرائی جارہی ہو اور بلے باز کی جانب سے غلطی کا انتظار کیا جارہا ہو۔اس واقعے کا ذکر سنجے مانجریکر نے اپنی بائیوگرافی میں بھی کیا اور بتایا کہ ہم جب ممبئی کے لئے کھیلتے تو اسی طرح عمران خان کو کاپی کرتے ہوئے حریف ٹیم کو چِت کیا کرتے تھے

شاید آپ یہ بھی پسند کریں
Loading...
تبصرے
Loading...