Loading...

سمندر میں تیل و گیس کی تلاش،4810 میٹر کی تک کھدائی مکمل،بڑی خبر سنادی گئی

0

وفاقی وزیر پٹرولیم عمر ایوب نے کہا ہے کہ حکومت بین الاقوامی سرمایہ کاری کو ہر طرح کا تعاون فراہم کرے گی۔ یہ بات انہوں نے منگل کو ایگزون موبل کے ایک وفد سے ملاقات کے دوران کہی۔ ایلکس والکوف چیئرمین ایل این جی ڈویلپمنٹ ایگزون موبل وفد کی سربراہی کر رہے تھے۔ اس کے علاوہ ارتضیً سید پریذیڈنٹ ایگزون موبل نے وفاقی وزیر پٹرولیم عمرایوب اورمعاون خصوصی ندیم بابر کو ا?ف شور ڈرلنگ سے متعلق بریفنگ دیتے ہوئے کہا کہ ای این ا?ئی کی قیادت میں ایگزون موبل نے

جنوری میں کام شروع کیا۔ندیم بابر نے کہا کہ سمندر میں کیکڑا ون سے توانائی وسائل کے روشن امکانات ہیں۔معاون خصوصی کا مزید کہنا تھا کہ پاکستان میں آزادانہ اور محفوظ سرمایہ کاری کی مکمل معاونت کریں

گے۔اس کے علاوہ عمر ایوب نے کہا کہ ایکسپلوریشن کے بعد اس جگہ پر روزگار کے بہت اچھے مواقع میسر ہوں گے۔ارتضی سید نے مزیدکہا کہ ایگزون موبل، ا?ف شور ایکسپلوریشن بلاکس اور ایل این جی میں بھی دلچسپی رکھتا ہے۔.ایگزون موبل نے ا?ف شور ڈریلنگ کے لیے ماحول دوست پالیسی بنانے کی بھی ترغیب دی جس کو معاون خصوصی نے سراہا۔اس وینچر میں ایگزون موبل،ای این ا?ئی کے علاوہ او جی ڈی سی ایل اور پی پی ایل بھی شامل ہیں.جو کہ خاموش شراکت دار ہیں.ایگزون موبل نے 5660 میٹر گہرائی کا ہدف بنایا ہے۔13 جنوری 2019 سے اس جوائنٹ وینچر نے کیکرا ون میں ڈرلنگ شروع کی.

تقریبا 4810 میٹر کی تک کھدائی مکمل ہوچکی ہے۔ڈریلنگ اس مرحلے میں داخل ہوگئی ہے جہاں تیل/گیس کی موجودگی کے امکانات کا تعین ہو جائے گا۔پاکستان میں ایگزون موبل کی سرمایہ کاری سے ایکسپلوریشن اور پروڈکشن سیکٹر کو اچھا سگنل جائے گا۔ پٹرولیم ڈویڑن پاکستان ا?ف شور (ایکسپلوریشن اور پروڈکشن) رولز 2019 اور ماڈل پروڈکشن شیئرنگ ایگریمنٹ 2019 پر بھی ڈرافٹ تیار کر رہا ہی.جس کی توثیق کیبنٹ کرے گی۔ا?یل اور گیس سیکٹر میں بین الاقوامی سرمایہ کاری کو فروغ دینے کے لیے بیرون ملک سے منگوائے جانے والے آلات پر لاگو ٹیکسوں اور ڈیوٹی پر رعایت بھی دی ہے

شاید آپ یہ بھی پسند کریں
Loading...
تبصرے
Loading...