امریکی سینیٹ میں آج صدر کے خلاف الزامات پر رائے شماری ہوگی

مزید خبریں

امریکی سینیٹ میں صدر ڈونلڈ ٹرمپ کے خلاف مواخذے کی حتمی سماعت بدھ کی شام ہوگی۔ عام خیال یہی ہے کہ صدر کو اختیارات کے غلط استعمال اور کانگریس کی راہ میں رکاوٹیں کھڑی کرنے کے الزامات سے بری کردیا جائے گا۔

امریکی سینیٹ کے اجلاس کے دوران اس کے ارکان منصف کا کردار ادا کرتے ہوئے حتمی اقدام کے طور پر ووٹ دیں گے۔ اس طرح دو ہفتے سے جاری مواخذے کے مقدمے کی کارروائی اختتام کو پہنچے گی۔

اس سے پہلے ایوان نمائندگان نے ان دو الزامات کے تحت صدر ٹرمپ کے خلاف مواخذے کی کارروائی کی تھی۔

صدر کو عہدے سے ہٹانے کے لیے 100 ارکان کے ایوان میں دو تہائی ووٹوں کی ضرورت ہے۔ صدر ٹرمپ کی ریپبلیکن پارٹی کے پاس 53 کی اکثریت ہے جبکہ ڈیموکریٹس کی تعداد 47 ہے۔

کسی ریپبلیکن نے ابھی تک یہ بیان نہیں دیا کہ وہ صدر کے خلاف ووٹ دینے میں دلچسپی رکھتے ہیں۔ اسی طرح ڈیموکریٹک پارٹی کے کسی سینیٹر نے یہ نہیں کہا کہ وہ اپنی جماعت سے اختلاف کرتے ہوئے صدر کو بری کرنے میں دلچسپی رکھتے ہیں۔

منگل کی رات اسٹیٹ آف دی یونین خطاب میں صدر نے مواخذے کا کوئی ذکر نہیں کیا تھا۔ لیکن انھوں نے اس عمل کو اب تک ’’خام خیالی‘‘ قرار دیا ہے اور کہا ہے کہ انھوں نے کوئی غلط کام نہیں کیا۔

Loading...

Comments are closed, but trackbacks and pingbacks are open.