ایئرپورٹ پر ضبط شدہ ’’ممنوعہ سامان‘‘ سے کرسمس ٹری تیار

یہ کرسمس ٹری مصنوعی پتوں اور شاخوں کے بجائے اُس ممنوعہ سامان سے بنایا گیا ہے جو مسافروں سے ضبط کیا گیا تھا۔ (تصاویر: بورڈ پانڈا)

مزید خبریں

لتھوینیا: ولنیئس ایئرپورٹ، لتھوانیا کے ایئرپورٹ حکام نے اس سال ایک عجیب و غریب کرسمس ٹری تیار کیا ہے جو مصنوعی پتوں اور شاخوں کے بجائے اُس ممنوعہ سامان سے بنایا گیا ہے جو ماضی میں مسافروں سے ضبط کیا جاتا رہا ہے۔

 

واضح رہے کہ شہری ہوا بازی کے عالمی قوانین میں یہ بات موجود ہے کہ کوئی بھی مسافر اپنے دستی سامان میں لائٹر، قینچی، چھری، چاقو، خنجر یا کوئی بھی دھار دار شئے نہیں رکھ سکتا۔ اس کے باوجود، اگر کوئی مسافر ان ممنوعہ اشیاء میں سے ایک بھی اپنے دستی سامان میں رکھ کر ایئرپورٹ پہنچ جائے تو اسے فوری طور پر ضبط کرلیا جاتا ہے۔

اس طرح سے جمع کردہ ممنوعہ اشیاء ایئرپورٹ کے گودام میں رکھی رہتی ہیں جن کا عملاً کوئی مصرف نہیں ہوتا۔ ولنیئس ایئرپورٹ حکام نے اس سال کرسمس پر مسافروں کو نہ صرف ایک منفرد انداز میں تفریح پہنچانے کا بندوبست کیا ہے بلکہ اس کرسمس ٹری میں موجود چھریاں، چاقو، لائٹر، بلیڈ اور دوسرا خطرناک سامان یہاں سے گزرنے والے مسافروں کو یاد دلاتے ہیں کہ انہیں بھی اپنے سفر کے دوران محتاط رہنا چاہیے اور اپنے دستی سامان میں ممنوعہ چیزیں رکھنے سے گریز کرنا چاہیے۔

Loading...

Comments are closed.